نئے پاکستان میں عوام لوڈشیڈنگ کا عذاب برداشت کر رہے ہیں

News Desk

قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرشہباز شریف نے کہا ہے کہ الیکشن میں دھاندلی پرتمام جماعتیں رونا رو رہی ہیں، دھاندلی پر تحقیقاتی کمیشن بننے تک پارلیمانی کارروائی نہیں چلنے دیں گے ، عمران خان کسی غلط فہمی میں نہ رہیں دھاندلی کے خلاف پارلیمانی کمیشن بنوا کر رہیں گے ، عمران نیازی میٹرو سمیت کسی بھی منصوبے میں کرپشن ثابت کر دے ہرسزاکے لئے تیارہوں،بیس دنوں میں ہی گیس ، بجلی اور کھاد کی قیمتیں بڑھا کر عوام پر ظلم کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ کمیشن میں آئندہ دھاندلی کو روکنے کیلئے بھی تجاویز پیش کی جائیں، عمران خان نے 17 اگست کو ملاقات میں پارلیمانی کمیشن کی بات کی، اپوزیشن اتحاد کمیشن بنوا کر رہے گا ۔

شہبازشریف نے کہا کہ بھاشا ڈیم کیلئے نواز حکومت نے 122 ارب روپے میں زمین خریدی اورنئے پاکستان میں عوام لوڈشیڈنگ کاعذاب برداشت کررہے ہیں۔ سابق وزیراعلی ٰشہباز شریف نے چینی وزیر خارجہ کے استقبال کیلئے نچلے درجے کے افسر کو بھیجنے پر بھی نئی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا چین پاکستان کا یار غار ہے ، چین نے کبھی ڈو مور کا مطالبہ نہیں کیا چین کے وزیر خارجہ کے ساتھ ایسا رویہ اختیار کرنا کوئی اچھا قدم نہیں، چینی وزیر خارجہ کا استقبال شاہ محمود قریشی کو کرنا چاہئے تھا ۔ انہوں نے کہا کہ گیس کی قیمتوں میں اتنا بڑا اضافہ اس سے پہلے نہیں ہوا، اس کے کروڑوں خاندانوں پر تباہ کن اثرات مرتب ہوں گے ، ہماری حکومت نے صنعتوں کی پیداواری صلاحیت کو بڑھانے کے لئے بجلی کی قیمت تین روپے یونٹ کم کی تھی،وہ ختم کر کے پانچ روپے بجلی کی قیمت میں اضافہ کر دیا گیا۔شہباز شریف نے کہا کہ نواز شریف کی لیڈر شپ میں پانچ ہزار میگا واٹ بجلی کے منصوبے گیس کے لگائے ، اپنے وسائل سے پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ آدھی سے بھی کم قیمت پر لگائے گئے منصوبوں سے بجلی سستی ہوئی۔

بجلی کی قیمت بڑھانے کا کوئی سوال پیدا نہیں ہوتا، مگر انہوں نے قیمتوں میں اضافہ کر دیا ۔ قیمتوں میں اضافے سے ایکسپورٹس کو سخت نقصان پہنچے گا،نواز شریف کی حکومت میں کھاد کی قیمت کو آدھا کرنے کے لئے اربوں روپے کی سبسڈیز دی گئیں۔ ہم نے بجلی سے چلنے والے ٹیوب ویلوں کے لئے بھی اربوں روپے کی سبسڈی دی، انکو بھی ختم کر دیا۔ ہم عام آدمی کی آواز بنیں گے اور حکومت کو چیرہ دستیوں کی قطعا اجازت نہیں دیں گے ۔ ڈیم بننے چاہئیں، لیکن عمران خان قوم کو بتاتے کہ بھاشا ڈیم کی زمین کے لئے نواز شریف نے اربوں روپے خرچ کئے ۔ پیسے اکٹھے کرنا اچھی بات ہے لیکن پن بجلی بنانے کیلئے فنڈز اکٹھے کرنے کی ضرورت نہیں، اسکے لئے کام شروع کریں، سرمایہ کاروں کو دعوت دیں۔ لوڈ شیڈنگ ختم کر دی گئی تھی پاور پلانٹس کو گیس ، کوئلہ مہیا نہیں کریں گے تو کس طرح چلیں گے ۔

مسلم لیگ ن کی حکومت کو تاریخی کریڈٹ جاتا ہے کہ ریکارڈمدت میں بجلی کے منصوبے لگائے۔ اگر آج لوڈ شیڈنگ ہو رہی ہے تو اس کا قطعا کوئی جواز نہیں۔ لیپ ٹاپس کا سلسلہ ختم کر دیا گیا ہے ، یہ لیپ ٹاپس امیر زادوں کو نہیں ملتے تھے ، قوم کے بچے اور بچیوں کو ملتے تھے ۔آج کا دور انفارمیشن ٹیکنالوجی کا ہے ، دانش سکول بھی بند کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ خدارا اس قوم میں دوبارہ لکیریں پیدا نہ کریں، اس ملک کے لئے ٹھیک نہیں۔ عمران خان سادگی کی دن رات بات کرتے ہیں، لیکن ٹی وی پر گاڑیوں کی نیلامی کے لئے اشتہارات پر پیسے خرچ رہے ہیں۔پنجاب میں 7 کلب سی ایم ہاؤس میں نے کبھی استعمال نہیں کیا، اپنے گھر رہا۔ خان صاحب کی گورنمنٹ میٹرو منصوبوں کا آڈٹ کروائے گی ۔آڈٹ شوق سے کروائیں لیکن پشاور میٹرو کا بھی کروا لیں ۔ 10ارب کی آفر کی بات بھی اب ثابت کردیں۔
وفاقی وزیراطلاعات ونشریات فواد چودھری نے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے بیان ہر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ اپوزیشن بتائےدھاندلی تحقیقات کیلئے تیارہیں، گیس، بجلی اورکھاد کے شعبوں کا بیڑہ غرق کیا، عمران خان چندہ مانگتے ہیں توعوام کو یقین ہوتا ہے صحیح جگہ استعمال ہوگا۔ نوازشریف اورمریم نواز (ن ) لیگ کی حکومت میں جیل گئے۔

شہبازشریف نے کہا کہ نوازشریف جتنی پیشیاں کسی نے بھی نہیں بھگتیں۔ یہ بھی سنیں کہ نوازشریف جتنا پیسا بھی کسی نے نہیں لوٹا۔ دھاندلی کے الزامات پراپوزیشن کے ساتھ مکمل تعاون کے لیے تیار ہیں۔ سی پیک سے متعلق جو بھی وعدے کیے ہیں انہیں پورا کریں گے۔فوادچودھری نے کہا کہ شہبازشریف نے انتقامی کارروائیوں کا الزام لگایا ہے۔

اپوزیشن آج تک نہیں بتا سکی کہ دھاندلی کہاں ہوئی ہے۔
اپوزیشن بتائے کہاں دھاندلی ہوئی؟ اپوزیشن کو یہ نہیں پتا کہ کہاں سے پولنگ ایجنٹس کونکالا گیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت گردشی قرضوں کے حوالے سے معاملہ حل کرنےجارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گیس بجلی اورکھاد کی قیمتوں میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا۔ ہم ملک کی کشتی کو ساحل پر لانے کیلئے اقدامات کررہے ہیں۔ دھاندلی کے الزامات پر اپوزیشن سے مکمل تعاون کیلئے تیارہیں۔
انہوں نے کہا کہ اپوزیشن یہ بھی نہیں بتاسکی کہ کس چیز کی تحقیقات کی جائیں۔ ن لیگ کی حکومت گیس، بجلی اورکھاد کے شعبوں کا بیڑہ غرق کیا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان چندہ مانگتے ہیں تو عوام کو یقین ہوتا ہے صحیح جگہ استعمال ہوگا۔ اپوزیشن کو یقین دلاتے ہیں ان کے پیسے ڈیمز کی تعمیر پر خرچ ہوں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *