نیب کا کالا قانون ختم کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے ، شاہد خاقان عباسی



News Desk

اسلام آباد میں مسلم لیگ نون کے رہنماوں نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ  اپوزیشن کے خلاف نام نہاد کیسز بنائے جارہے ہیں، ڈی جی نیب لاہور نے گذشتہ روز  جو معلومات شیئر کیں، وہ پارلیمان کی ہتک تھی۔اپوزیشن نے مل کر ایک نقطہ اعتراض اسپیکر قومی اسمبلی کو پیش کیا ہے جس پر انہوں نے کہا کہ وہ غور کرکے فیصلہ دیںگے۔ ان کا کہنا تھا کہ اسیپیکر کو اس بات پر اعتراز ہے کہ اپوزیشن کے ممبران بہت بولتے ہیں۔شاہد خاقان نے کہا کہ اس وقت  صرف ایک جماعت سے انتقام لیا جارہا ہے اور وہ پاکستان مسلم لیگ ن ہے۔ جس پربنا ثبوت کے الزامات لگائے جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اگر نیب تحقیقات کرنا چاہتی ہے تو میں انہیں دو کیس دے دیتا ہوں۔مسلیم لیگ نون کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہم تو خود احتساب کے خواہاں ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ قومی احتساب بیورو(نیب) سیاسی پارٹی بن چکا ہے، آمریت کے دور میں جو نہیں ہو پایا وہ اب ہورہا ہے۔نیب ایک کالا قانون ہے اس کو ختم ہونا چاہیے تھا۔ انہوں نے کہا کہ سیاست کو کنٹرول کرنے کے لیے نیب کو استعمال کیا جارہا ہے، جو بولے گا اس کیخلاف نیب کا کیس بن جائے گا۔انہوں نے قومی احتساب بیورو(نیب) کو سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کرنے کا الزام بھی عائد کردیا۔

سندھ میں نیب کی کارروائیوں پر شاباش دینے والے شاہد خاقان عباسی اپنی پارٹی کے  خلاف ہونے والے ایکشن پر سیخ پا ہوگئے، نیب کو مشرف کا بنایا ہوا قانون قرار دے دیا۔پریس کانفرنس سے خواجہ آصف ، مریم اورنگزیب اور دیگر نون لیگی رہنماوں نے بھی خطاب کیا انہوں نے کہا کہ  اپوزیشن کے خلاف نام نہاد کیسز بنائے جارہے ہیں، ڈی جی نیب لاہور نے گذشتہ روز  جو معلومات شیئر کیں، وہ پارلیمان کی ہتک تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *