چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کا بورڈ آف پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کو تحلیل کرنے کا حکم

News Desk

سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بورڈ آف پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کے ارکان کی تقرری سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد پیش ہوئیں۔سپریم کورٹ نے بورڈ آف پنجاب ہیلتھ کیئر  کمیشن  کو تحلیل کرتے ہوئے 2ہفتےمیں نیابورڈ تشکیل دینے کی ہدایت کردی ، چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ بہترین شہرت والے افراد کو شامل کرکے نیا بورڈ تشکیل دیا جائے۔

کیس کی سماعت کے دوران اونچی آواز میں بات کر کرنے پر چیف جسٹس ہیلتھ کئیر کمیشن کے ممبر بورڈ حسین نقی پر برہم ہو گئے۔ چیف جسٹس نے پوچھا کہ انہوں نے بورڈ کے چیئرمین جسٹس عامر رضا کے ساتھ بدتمیزی کیوں کی؟حسین نقی نے کہا کہ مجھے بولنے کا موقع دیا جائے اونچی آواز پر معذرت خواہ ہوں۔ بینچ کے رکن جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ یہ ادارہ ریگولیٹر ہے، مگر وہاں پر سیاست ہو رہی ہے۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے عدالت کو بتایا کہ کمیشن بورڈ سپریم کورٹ کی ہدایت کے مطابق تشکیل د یا ہے۔ انہوں نے کہا کہ قانونی طریقہ کار کے مطابق ممبران کی نامزدگی کی گئی جس کی وزیراعلی نے منظوری دے دی ۔

عدالت نے ریمارکس دیے کہ بورڈ کو غیر جانبدار اور آزاد ہونا چاہیےچیف جسٹس نے یاسیمن راشد سے کہا  کہ مجھے آپ سے بڑی امیدیں تھیں،آپ نےبورڈمیں کیسے کیسے لوگ شامل کر رکھے ہیں، جس پر یاسمین راشد نے بتایا سپریم کورٹ کی ہدایت کےمطابق بورڈ بنایا، طریقہ کار کے مطابق ممبران کی نامزدگی کی جس کی منظوری دی گئی نئے بورڈ کی تشکیل پر ڈاکٹر یاسمین راشد نے عدالت سے دو ہفتوں کی مہلت مانگی جس پر چیف جسٹس نے ڈاکٹر یاسمین راشد کی استدعا منظور کرتے ہوئے دوہفتوں میں نیا بورڈ تشکیل دینے کا حکم دے دیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *