شہباز شریف نے این آر او مانگ لیا: کیا عمران خان دے دیں گے؟‎



News Desk

وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے دعویٰ کیا ہے کہ شہباز شریف نے این آر او مانگا ہے۔اور میں جس عمران خان کو جانتا ہوں وہ این آر ا و کبھی نہیں کرے گا۔


دوسری جانب وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے دعویٰ کیا ہے کہ شہباز شریف نے حکومت سے این آر او مانگا ہے تاہم وزیر اعظم عمران خان این آر او نہیں دیں گے۔یہ دعویٰ شیخ رشید احمد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کیا۔

یاد رہے کہ اس سے قبل بھی 12 نومبر کو شیخ رشید احمد نے دعویٰ کیا تھاکہ شہباز شریف حکومت سے این آر او مانگنے کی کوشش کررہے ہیں جبکہ آصف زرداری نے جیل جانے کی تیاری کرلی کیونکہ انہیں وہاں جانے سے فرق نہیں پڑے گا۔

اُن کا کہنا تھاکہ جس دن فالودے والے کا اکاؤنٹ کھلے گا۔ سب کو اصل حقیقت کا اندازہ ہوجائے گا۔ اسی طرح جس دن بھی ایک اقامہ کھلے گا سب کو اس کی حیثیت کا بھی پتہ چل جائے گا۔

انہوں نے مخالفین پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ پانچ ہزار جعلی اکاؤنٹس سامنے آئے ہیں۔ ماضی کے حکمرانوں نے مُردوں کو  بھی نہیں بخشا۔ آئندہ برس ایسے لوگ سیاسی منظر نامے میں کہیں بھی نظر نہیں آئیں گے۔

دوسری جانب نیب کی تحقیقاتی ٹیم نے اپوزیشن لیڈرشہبازشریف کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ نیب کی جانب سے اپوزیشن لیڈرقومی اسمبلی شہبازشریف کواحتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا۔نیب کے ریفرنس میں آشیانہ ہاؤسنگ سوسائٹی کی اراضی پیراگون سٹی کو غیرقانونی طور پر دینے کا ذکربھی ہے۔نیب عدالت سے مزید جسمانی ریمانڈ کے حصول کی کوشش کرے گی۔


نیب کی جانب سے شہبازشریف کو احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا۔ نیب نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کیخلاف ریفرنس تیار کرلیا ہے۔ نیب کی تحقیقاتی ٹیم شہبازشریف کواحتساب عدالت میں  جسمانی ریمانڈ کے حصول کیلئے پیش کرے گی۔

واضح رہے نیب لاہور نے5 اکتوبر کو مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف کو صاف پانی کیس میں طلب کیا تھا تاہم ان کو آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل کرپشن کیس میں گرفتار کرلیا تھا۔

نیب نے شہبازشریف کو احتساب عدالت میں پیش کیا تھا جس میں احتساب عدالت نے اُن کا دس روزہ جسمانی ریمانڈ کی منظوری دی تھی۔ بعد ازاں 16 اکتوبر کو جب شہباز شریف کو پیش کیا گیا تو عدالت نے ملزم کے جسمانی ریمانڈ میں 30 نومبر تک توسیع کردی تھی۔

اکتوبر کی 29 تاریخ کو شہباز شریف کا ریمانڈ ختم ہوا تو نیب نے عدالت میں مزید 15 روز کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی تھی جسے احتساب عدالت نے منظور کرتے ہوئے ریمانڈ میں 7 نومبر تک توسیع کردی تھی۔


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *