ڈالرکی قیمت میں اضافہ: کیا حکومت نے آئی ایم ایف کی شرائط مان لیں؟‎

News Desk

ڈالر کی قیمت تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے ۔ ایک ہی دن میں ڈالر کی قیمت میں 8 روپے کا اضافہ کے بعد ڈالر142 روپے کا ہوگیا جس پر معاشی ماہرین نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں تیزی سے اُتار چڑھاؤ کا سلسلہ جاری ہے۔ جس کے تحت انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر ایک دن میں 8 روپے مہنگا ہوا۔
جس کے باعث آج انٹر بینک میں ڈالر کی قیمت 142 روپے کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی۔ گذشتہ روز انٹربینک میں ڈالرکی قدر10پیسے کم ہوئی تھی. جس سے ڈالر کی قیمت خرید 134روپے اور فروخت 134.05روپے پر آ گئی تھی تاہم اوپن مارکیٹ میں ڈالر 135.40روپے پرمستحکم رہا تھا۔ ماہر معاشیات کا کہنا ہے کہ ڈالر کی قیمت میں اس حالیہ اضافے اور روپےکی قدرمیں کمی سے ملک میں مہنگائی کا طوفان آجائے گا۔

ڈالر کی قیمت میں اضافے سے درآمدی مصنوعات جس میں کھانے کا تیل، مختلف دالیں، خشک دودھ، پیٹرول، ڈیزل، الیکٹرونکس مصنوعات، موبائل فونز، موٹر سائیکلیں اور گاڑیاں وغیرہ سب کچھ مہنگا ہونے کا واضح امکان پیدا ہو گیا ہے۔

انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں اضافے پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ترجمان مسلم لیگ ( ن ) مریم اورنگزیب نے کہا کہ حکومت نے آئی ایم ایف سے معاہدہ کرلیا ہے اور عوام سے جھوٹ بولا عوام کو بتایا جائے کہ کن شرائط پر آئی ایم ایف سے معاہدہ کیا گیا۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ وزیر خزانہ اسد عمر نے 100 دن کی تقریب میں گزشتہ روز جھوٹ بولا اور قوم کو دھوکہ دیا. فریبی اور جعلی حکومت کا راتوں رات ایک اور بڑا ڈاکہ اور قوم سے دھوکہ سامنے آگیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ڈالر کی قدر میں اضافے سے بدترین مہنگائی آئے گی قوم سے جھوٹ بولنے اور دھوکہ دہی پر عمران حکومت مستعفی ہو۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ ثابت ہوگیا کہ حکومت چلانا اور قوم کے مسائل کا حل عمران حکومت کے بس کی بات نہیں۔ وقت اور حالات گواہی دے رہے ہیں کہ انڈے مرغی کی سرکار نہیں چلے گی۔
مرغیوں اور انڈوں سے معیشت ٹھیک کرنے کا فارمولا دینے والے سے یہی توقع کی جاسکتی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *