طارق عزیز نے اپنی تمام جائیداد اور دولت پاکستان کے نام کرنے کا اعلان کر دیا



News Desk

طارق عزیز کا کہنا تھا کہ اللہ پاک نے مجھے اولاد نہیں دی یہ خدا کی قدرت ہے جسے چاہے دے جسے چاہے نہ دے اور جسے چاہے دے کہ واپس لے لے۔ میں مرنے کے بعد اپنی ساری جائیداد دولت پاکستان کے نام کرتا ہوں ان کا مزید کہنا تھا کہ میں نے یہ وصیت کی ہے کہ میرا سب کچھ میرے مرنے کے بعد پاکستان کا ہے۔

ان کے اس پیغام پر سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے انہیں خوب سراہا گیا اور صارفین نے طارق عزیز کے لئے اچھی صحت، لمبی عمر اور نیک خواہشات کا اظہار کیا۔


میزبان طارق عزیز 1936 میں بھارت کے شہر جارکنڈ میں پیدا ہوئے۔انہیں سرکاری ٹیلی وژن کی نشریات کا باقاعدہ آغاز کرنے کا اعزاز بھی حاصل ہے 1974 میں نیلام گھر نامی شو انہیں شہرت کی بلندیوں پر لے گیا جسے بعد میں بزم طارق عزیز کا نام دے دیا گیا۔میزبانی کے ساتھ ساتھ طارق عزیزپاکستان کی کئی نامور فلموں میں اداکاری کے جوہر بھی دکھا چکے ہیں جبکہ انہوں نے  ملکی سیاست میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔

26 نومبر 1964 میں پاکستان ٹیلی ویژن سکرین پر نظر آنے والا سب سے پہلا چہرہ انہی کا تھا۔1975 میں شروع کیے جانے والے ان کے سٹیج شو نیلام گھر نے ان کو شہرت کی بلندیوں پر پہنچا دیا۔

دیکھتی آنکھوں ، سنتے کانوں سے پروگرام کا آغاز کرنے والے طارق عزیز ہمہ جہت شخصیت ہیں۔ انہوں نے ریڈیو اور ٹی وی کے پروگراموں کے علاوہ فلموں میں بھی اداکاری کی۔ ان کی سب سے پہلی فلم انسانیت (1967 ) تھی اور ان کی دیگر مشہور فلموں میں سالگرہ، قسم اس وقت کی، کٹاری، چراغ کہاں روشنی کہاں، ہار گیا انسان قابل ذکر ہیں۔


طارق عزیز اس وقت اپنی زندگی کی 82 بہاریں دیکھ چکے ہیں۔اس موقع پر انہوں نے اپنے سارے اثاثے پاکستان کے نام کرنے کا اعلان کیا ہے۔اس بات کا اعلان انہوں نے اپنے سوشل میڈیا اکاونٹ پر کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *