آرڈیننس کے ذریعے آمریت کے دور میں حکومت چلائی جاتی ہے‎

News Desk

پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی آرڈیننس کے ذریعے حکومت چلانے کی بھر پور مخالفت کرے گی حکومت کی100روزہ کارکردگی مرغی کے انڈے ہیں۔
خورشید شاہ نے کہا کہ حکومت آرڈیننس کے ذریعے معاملات چلانے اور پارلیمنٹ میں لڑائی سے گریز کرے۔ آرڈیننس کے ذریعے آمریت کے دور میں حکومت چلائی جاتی ہے لگتا ہے کہ حکومت آمریت کا نعم البدل بن رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی پارلیمانی نظام پر یقین رکھتی ہے۔ آرڈیننس کے اجرا پر حکومت کو ٹف ٹائم دیا جائے گا۔ تحریک انصاف کی 100 روزہ کارکردگی پر خورشید شاہ نے کہا حکومت نے غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کیا اور سو روزہ کارکردگی میں مرغی نے انڈے دیے ہیں۔

حکومت کے پاس صرف سات ووٹوں کی اکثریت ہے۔ حکمران آرڈیننس کے ذریعے حکومت چلانے کی کوشش نہ کریں۔ پیپلزپارٹی مخالفت کرے گی روایت پر عملدرآمد تک قائمہ کمیٹیوں کاحصہ نہیں بنیں گے امید ہے حکومت خود سے قائمہ کمیٹیاں بنانے والی بے وقوفی نہیں کرے گی۔

خورشید شاہ نے کہا کہ ملکی مفاد میں قانون سازی کے لیے پیپلز پارٹی حکومت کی حمایت پر تیار ہے۔ اپوزیشن میثاق معیشت کے لیے حکومت سے تعاون کو تیار ہے اور حکومت آئینی بلوں پر مشاورت کرے پارلیمنٹ میں مکمل تعاون کیا جائے گا۔خورشید شاہ نے کہا کہ پیپلز پارٹی نظام اور روایات کے ساتھ کھڑی ہے۔ پیپلز پارٹی کے رہنما کا کہنا تھا کہ حکومت میں ایک دو ایسے افراد موجود ہیں جن کو سسٹم کا پتہ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *