مولانا فضل الرحمن کی ایم ایم اے نے تحریک انصاف کی حمایت کر دی

News Desk

قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران حکمراں جماعت تحریک انصاف کے رکن رمیش کمار کیجانب سے شراب پر پابندی کے حوالے سے ترمیمی بل پیش کیا گیا۔ رمیش کمار نے ترمیمی بل پیش کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ چونکہ شراب تمام مذاہب میں حرام ہے۔ اس لئے اسکے استعمال اور اسکی فروخت پر پابندی عائد کی جائے۔ جبکہ پی پی پی اور مسلم لیگ نواز دونوں نے اس بل کی مخالفت کی ہے۔ 

گزشتہ روز ہونے والے قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران اس وقت سب حیران رہ گئے۔ جب مولانا فضل الرحمان کی قیادت میں بننے والے مذہبی جماعتوں کے اتحاد ایم ایم اے نے حکمران جماعت تحریک انصاف کی حمایت کرنے کا اعلان کر دیا۔ قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران حکمراں جماعت تحریک انصاف کے رکن رمیش کمار کی جانب سے شراب پر پابندی کے حوالے سے ترمیمی بل پیش کیا گیا۔ رمیش کمار نے ترمیمی بل پیش کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ چونکہ شراب تمام مذاہب میں حرام ہے۔ اس لئے اس کے استعمال اور اس کی فروخت پر پابندی عائد کی جائے۔ رمیش کمار کی جانب سے پیش کئے گئے ترمیمی بل کی مسلم لیگ نواز اور پیپلز پارٹی نے مخالفت کی۔

تاہم اپوزیشن پارٹی متحدہ مجلس عمل نے اس بل کی منظوری کیلئے حکمراں جماعت تحریک انصاف کا ساتھ دیا۔ مگر اس کے باوجود شراب پر پابندی کا ترمیمی بل منظور نہ ہو پایا۔ حکومت اپنے اکثریتی اراکین کی غیر حاضری کے باعث بل منظور کروانے میں ناکام رہی ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *