صنعت کاروں،سرمایہ داروں کو مجرموں کی طرح پیش کرنے والے ملک ترقی نہیں کرتے‎

News Desk

وزیراعظم عمران خان کا اکنامک فورم سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ میرا وژن ہے کہ پاکستان خود مختار ملک بنے۔ہمیں دوسروں پر انحصار کرنے کی بجائے خود انحصاری اختیار کرنی چاہیے۔غربت کے خاتمہ کیلئے مربوط پلان لارہے ہیں۔ایکسپورٹ کو بڑھانے کی کوشش کرینگے۔منی لانڈرنگ اور اسمگلنگ کو ایک ہی طرح سے ڈیل کرینگے۔اسمگلنگ اور منی لانڈرنگ کی روک تھام کیلئے پالیسیاں لارہے ہیں۔
انہوں نے کہا پاکستان قدرتی ذخائر سے مالامال ہے بلوچستان میں تانبے کے وسیع ذخائر موجود ہیں جن کو استعمال میں لاکر پاکستان کو اپنے قدموں پر کھڑا کیا جا سکتا ہے۔اس کے علاوہ اپنی برآمدات بڑھانے کیلئے بھی جامع اقدامات کریں گے۔
انہوں نےکہا کہ 60 کی دہائی میں پاکستان بڑی تیزی سے ترقی کر رہا تھا۔چین نے تیس سال میں ستر کروڑ افراد کو غربت سے نکالا۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ قومی غیرت کیلئے خود انحصاری بہت ضروری ہے ہاتھ پھیلانے والے ملک آگے نہیں نکل سکتے۔

عمران خان نے کہا پیسہ جا ئز ذرائع سے کمانا جرم نہیں ٹیکس نہ دینا جرم ہے۔انہوں نے کہا میرا وژن ہے کہ پاکستان خود مختار ملک بنے۔ہمیں دوسروں پر انحصار کی بجائے خود انحصاری اختیار کرنا ہو گی۔سرمایہ کاروں کی بات کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ صنعت کاروں،سرمایہ داروں کو مجرموں کی طرح پیش کرنے والے ملک ترقی نہیں کر سکتے ہماری حکومت سرمایہ کاروں کو محفوظ ماحول فراہم کرےگی۔سرمایہ داروں کے مسائل ایک چھت تلے حل کیے جائینگے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *