بہتر سرحدی نظام سے پاکستان اور افغانستان دونوں کا فائدہ ہو گا وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی

News Desk

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں سہ فریقی کانفرنس میں پاکستان ، افغانستان اور چین شرکت کر رہے ہیں۔ پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے افغانستان کے دارالحکومت کابل میں سہہ فریقی کانفرنس میں خطاب کے دوران کہا ہے کہ چالیس سال سے افغانستان جنگ و جدل کا شکار ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور افغانستان کے مابین مذہبی، تہذیبی اور تاریخی ہم آہنگی ہے، ہمسایہ ملک کی حیشیت سے افغانستان کی صورتحال سے پاکستان سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے۔

سیکیورٹی کی بہتر صورتحال کے لیے آپس میں تعاون اورانٹیلی جنس روابط بڑھانےکی ضرورت ہے۔بہترسرحدی نظام سےپاکستان اورافغانستان دونوں کوفائدہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کےمسئلےکابہترین حل روزگار اورترقی کےمواقع پیداکرناہے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ افغانستان میں امن خطے کی معاشی ترقی اور روابط کے لیے ناگزیر ہے، پاکستان، چین اور افغانستان کو روابط بڑھانے ہوں گے۔کابل میں جاری مذاکراتی سیشن میں پاکستانی وزیرخارجہ نے کہا ہے کہ ہمیں تعاون کو بڑھانے اور انٹیلی جنس روابط میں بڑھانے کی ضرورت ہے، انہوں نے  خطاب کے دوران کہا کہ پاکستان دہشت گردی کے مکمل خاتمے کے لیے پر عزم ہے۔

سہ فریقی مذاکرات کے ذریعے تینوں ممالک کی بھرپور کوشش ہے کہ سیاسی معاونت کو بروئے کار لا کر افغانستان میں قیام امن کی راہ ہموار کی جائے کیونکہ افغانستان میں قیام امن، خطے کی معاشی ترقی، روابط کی بہتری اور سیکورٹی اور سلامتی کے لیے ناگزیر ہے۔وزیرخارجہ نے اعلان کیا کہ ہم کابل اور لوگر میں اسپتالوں کا جلد افتتاح کرنے جا رہے ہیں، یہ دونوں اسپتال پاکستان کی جانب سے افغان عوام کے لیے تحفہ ہیں۔ یہ فورم پاکستان اور افغانستان کے مابین پشاور کابل موٹروے، اور کوئٹہ کندھار ریلوے لائن بنانے اور اسے سہ فریقی تجارت کے پیش نظر چین سے منسلک کرنے جیسے بڑے منصوبوں کے ذریعے باہمی روابط کو مستحکم کرنے میں بھی معاون ثابت ہو سکتا ہے۔

افغان وزیرخارجہ صلاح الدین ربانی نے اپنے خطاب میں کہا کہ دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پاکستان سےتعاون کی ضرورت ہے اور ہم  پاکستان کے ساتھ  بہتر تعلقات کے خواہاں ہیں۔پاکستانی وفد میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ سمیت سیاسی، سول اور عسکری حکام شامل ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *