سپریم کورٹ کے حکم پر ایف آئی اے کی کاروائی ،16 نجی سکول سیل

News Desk

سپریم کورٹ آف پاکستان کے حکم کے بعد ایف آئی اے نے نجی اسکولوں کے خلاف فیسوں میں اضافے سے متعلق کارروائی کرتے ہوئے 16 اسکولوں کو سیل کر دیا ہے، سیل کیے جانے والوں میں ایلیٹ کلاس کے کئی اسکولوں کی برانچز بھی شامل ہیں۔یف آئی اے نے سپریم کورٹ کے حکم پر فیسوں میں اضافے سے متعلق کارروائی کرتے ہوئے، کراچی میں 16 اسکولوں کو سیل کردیا اور متعدد اسکولوں کا ریکارڈ قبضے میں لے لیا، جبکہ پنجاب کے مختلف علاقوں میں بھی اس سلسلے میں کارروائی جاری ہے۔

ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کی ہدایات پر اسکولوں کا ریکارڈ قبضے میں لیا گیا ہے، جن اسکولوں کو سیل کیا گیا ہے ان میں سٹی اسکول، بے ویو اکیڈمی، بیکن ہاؤس، جنریشن اسکول، فروبل ایجوکیشن سینٹر، سولائزیشن اسکول شامل ہیں جب کہ بیکن ہاؤس اور سٹی اسکول کی متعدد برانچیں سیل کردی گئی ہیں۔سپریم کورٹ آف پاکستان نے تمام بڑے اسکولوں کی بنیادی فیس میں 20 فیصد کمی کا حکم دیتے ہوئے کہا تھا کہ نجی اسکول فیس میں سالانہ 8 فیصد سے زیادہ اضافہ نہیں کر سکتے۔ تاہم، اسکولوں کو ازخود پانچ فیصد سالانہ فیس بڑھانے کا اختیار ہوگا اور پانچ فیصد سے زائد اضافے کیلئے ریگولیٹری اتھارٹی کی اجازت درکار ہوگی۔

تمام اسکول گرمیوں کی چھٹیوں کی آدھی فیس واپس یا ایڈجسٹ کریں گے۔ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کی ہدایات پر اسکولوں کا ریکارڈ قبضے میں لیا گیا ہے، جن اسکولوں کو سیل کیا گیا ہے ان میں سٹی اسکول، بے ویو اکیڈمی، بیکن ہاؤس، جنریشن اسکول، فروبل ایجوکیشن سینٹر، سولائزیشن اسکول شامل ہیں جب کہ بیکن ہاؤس اور سٹی اسکول کی متعدد برانچیں سیل کردی گئی ہیں۔سپریم کورٹ نے 21 بڑے اسکولوں کے اکاؤنٹس تحویل میں لینے اور کھاتے ضبط کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا تھا  کہ نجی اسکولوں کو غیر ضروری منافع نہیں کمانے دیں گے۔ عدالت نے قرار دیا کہ فیس کے معاملے پر اگر بچے کو نکالا گیا یا اسکول بند کیا تو اس کی ذمہ داری مالکان پر ہوگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *