انسداد دہشت گردی کی عدالت نے فیصل رضا عابدی پر فرد جرم عائد کر دی

News Desk

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق سینیٹ سید فیصل رضا عابدی پر انسداد دہشت گردی کی عدالت نے فرد جرم عائد کر دی ہے ۔چند ماہ قبل فیصل رضا عابدی نے نجی چینل کو دیئے گئے انٹرویو میں چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار کے خلاف نا زیبا زبان استعمال کی تھی جس پر ان کے خلاف دہشت گردی کا مقدمہ درج کیا گیا تھا ۔سماعت کے دوران فیصل رضا عابدی نے صحت جرم سے انکار کیا۔

ان کے وکیل نے جج سے درخواست کی کہ فیصل رضا عابدی کی طبیعت ناساز ہے تاہم ان کو اسپتال منتقل کیا جائے۔اشتعال انگیز انٹرویو کیس میں انسداد دہشت گردی عدالت نے فیصل رضا عابدی پر فرد جرم عائد کر دی، سابق سینیٹر نے صحت جرم سے انکار کر دیا۔عدالت نے حکم دیا کہ فیصل رضا عابدی کا دوبارہ طبی معائنہ کیا جائے اور کہا کہ ضرورت پیش آنے کے بعد منتقلی کا فیصلہ کیا جائے گا۔

عدالت نے آئندہ سماعت پر استغاثہ کے گواہوں کو طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔وفاقی دارالحکومت کی مقامی عدالت نے 13 اکتوبر کو فیصل رضا عابدی کو چیف جسٹس سے متعلق نازیبا ریمارکس دینے پر درج مقدمہ میں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا تھا۔یاد رہے فیصل رضا عابدی کو تھانہ سیکریٹریٹ پولیس نے سپریم کورٹ کے باہر سے گرفتار کیا تھا، فیصل رضا عابدی کو دفعہ 780 اے کے تحت حراست میں لیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *