فوٹیج بنانے پر نواز شریف کے گارڈز کا نجی ٹی وی کے کیمرہ مین پر تشدد

News Desk

اسلام آباد میں پارلیمنٹ ہاوس کے باہر سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کے ذاتی محافظوں نے نجی ٹی وی کے کیمرہ مین کو تشدد کا نشاہ بنا ڈالا ۔تشدد سے کیمرہ مین شدید زخمی ہو گیا اورحالت غیر ہو گئی اور بیہوش گیا ۔نواز شریف کے گارڈز  نےسماء  کے کیمرہ مین کو لات مار کر شدید زخمی کر دیا جبکہ اس سے قبل کیمرا مین کو تشدد کرکے زمین پر گرا دیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق پارلیمنٹ ہاؤس میں مسلم لیگ ن کے پارلیمانی اجلاس کے بعد کوریج کرنے والے صحافیوں کو نواز شریف کے اسکواڈ نے دھکے دیے اور دو کیمرا مینوں پر تشدد کیا۔بے ہوش ہونے والے کیمرا مین کا اسپتال میں معائنہ جاری ہے، معائنے کے بعد میڈیکل رپورٹ جاری کی جائے گی۔ دوسری طرف صحافیوں نے نواز شریف کے ایک گارڈ کو پکڑ لیا، جب کہ ایک گاڑی میں بیٹھ کر فرار ہو گیا۔واقعہ کے بعد قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے کہا ہے کہ وہ صحافیوں سے مل کر معذرت کریں گے۔

دوسری طرف مریم اورنگ زیب نے پارلیمنٹ کے باہر احتجاج کرنے والے صحافیوں سے ملاقات میں نواز شریف کے چیف سیکورٹی افسر کے خلاف مقدمے کے اندراج پر آمادگی کا اظہار کیا۔ انھوں نے کہا کہ کیمرا مین کو تشدد کا نشانہ بنایا جانا انتہائی قابلِ مذمت ہے۔ملک بھر کی صحافتی تنظیموں اور پریس کلب کے اراکین نے واقعے کی شدید مذمت کی ہے اور واقعہ کے ذمہ داروں کو کڑی سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *