دنیا کے کرپٹ ترین لوگوں میں نواز شریف بھی شامل ہے،فواد چوہدری

News Desk

 وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ نواز کے قائد نوازشریف کو فلیگ شپ میں ٹیکنیکل بنیادوں پر چھوڑا گیا، جب تک حسن نواز گرفتار نہیں  ہوں گے اور عدالت کے سامنے پیش نہیں ہوں گے اس پر آگے کارروائی نہیں ہو سکتی۔ سابق وزیراعظم نواز شریف اور سابق صدر آصف علی زرداری قوم کے سامنے بے نقاب ہو چکے ہیں۔والد کہتے ہیں کہ بچوں کو نہیں جانتے اور بچے کہتے ہیں والد کو نہیں جانتے۔

تین دفعہ منتخب ہونے والا وزیراعظم کہتا ہے کہ بچوں پر پاکستان کا قانون لاگو نہیں ہوتا لیکن بچے اتنے نالائق کہ والد کے دفاع میں پاکستان نہیں آئے۔ اتنے شواہد کے بعد نواز شریف کا دفاع کرنے والوں کو شرم آنی چاہیے۔2010 تک ہل میٹل مل ڈھائی لاکھ تک خسارے میں تھی، 2010 میں پنجاب میں ن لیگ کی حکومت آئی تو مل نے سونے کے انڈے دینا شروع کر دیے، مل کے ذریعے نواز شریف کو 9 لاکھ ڈالر براہ راست نواز شریف کو بھجوائے گئے، ان کے اکاؤنٹس سے 83 کروڑ مریم نواز کے اکاؤنٹ میں گیا۔نواز شریف کو بارہا اس کیس میں اپنی صفائی کا موقع ملا مگر ایک بھی جگہ وہ اپنی منی ٹریل کو ثابت نہیں کر سکے۔

میاں نواز شریف کے نوکروں کے اکاؤنٹس میں بھی اربوں روپے رکھے گئے جس کا ایک، ایک دستاویزاتی ثبوت موجود ہے، حسین نواز وہاں بیٹھ کر رقم  پاکستان بھیجتے تھے۔انہوں نے کہا کہ احتساب عدالت نے تاریخی فیصلہ دیا ہے،دنیا کہ کرپٹ لوگوں میں نواز شریف بھی شامل ہیں، نواز شریف کا دفاع کرنیوالوں کوشرم آنی چاہئے ۔

نوازشریف کہتے ہیں کہ بیٹوں پر پاکستان کا قانون لاگو نہیں ہوتا، نوازشریف نے اپنے بچوں کو باہر رکھا وہاں کمیشن طے کرتے تھے اور جس سے کچھ پیسے پاکستان میں آجاتے تھے اور باقی کی یہ وہاں جائیداد بھی خرید لیتے تھے جبکہ حسن نواز کہتے ہیں کہ وہ پیسا باہر سے بھیج رہے ہیں، یہ ساری ملیں اورکمپنیاں کاغدوں پر تھیں، ان کا کوئی کاروبار نہیں تھا، ماضی میں قانون بنایا گیا کہ باہر سے پیسے بھیجنے والے سے ذرائع پوچھے جائیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *