سابق وزیر اعظم بینظیر بھٹو کی گیارہویں برسی آج منائی جا رہی ہے

News Desk

سابق وزیر اعظم پاکستان اور پاکستان پیپلزپارٹی کی چیئرپرسن بے نظیر بھٹو کو بچھڑے گیارہ برس بیت گئے۔بینظیر بھٹو اکیس جون 1953ء کو سندھ کے مشہور سیاسی گھرانے بھٹو خاندان میں پیدا ہوئیں ۔ان کے والد ذوالفقار علی بھٹو انہیں پیار سے پنکی کہتے تھے ۔بے نظیر بھٹو نے ابتدائی تعلیم کراچی راولپنڈی اور مری جبکہ اعلیٰ تعلیم برطانیہ اور امریکا سے حاصل کی۔

بے  نظیر بھٹو کو 27 دسمبر 2007 کو دہشت گردوں نے راولپنڈی کے لیاقت باغ میں منعقدہ جلسے کے بعد نشانہ بنایا تھا۔جس میں بی نظیر بھٹو ساتھیوں سمیت شہید ہو گئی تھیں ۔بینظیر بھٹو 1987ء میں آصف علی زرداری کے ساتھ رشتہ ازدواج میں منسلک ہوئیں۔ دس جنوری 1988ء وہ تاریخی دن تھا جب محترمہ بے نظیر بھٹو کی طویل جدوجہد اور قربانیاں رنگ لائیں اور وہ اسلامی دنیا کی پہلی خاتون وزیراعظم منتخب ہوئیں تاہم 10 ماہ بعد ہی ان کی حکومت تحلیل کر دی گئی۔

گڑھی خدا بخش میں منعقد تعزیتی جلسے سے سابق صدر آصف علی زرداری، پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری سمیت دیگر رہنما خطاب کریں گے۔ملک کے دیگر شہروں اور دیہاتوں میں بھی قرآن خوانی اور دُعائیہ تقریبات کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ے نظیر بھٹو کی برسی میں شرکت کے لیے ملک بھر سے قافلے گڑھی خدا بخش پہنچ رہے ہیں جہاں وہ بے نظیر بھٹو کے مزار پر حاضری بھی دیں گےجلسہ گاہ کو چاروں طرف سے سیل کردیا گیا ہے ۔

جبکہ واک تھرو گیٹ کے ذریعے چیکنگ کے بعد شرکاء کو اندر جانے کی اجازت ہوگی، شرکاء کی نقل وحرکت پر نظر رکھنے کیلئے سی سی ٹی وی کیمرے بھی نصب کئے گئے ہیں۔برسی کے اختتام پر پارٹی تمام شہداء کیلئے دعا کی جائے گی، دوسری جانب برسی کے موقع پر سندھ حکومت کی جانب سے آج تعطیل کا اعلان کیا گیا ہے، اس موقع پر صوبائی حکومت کے تمام دفاتر اور تعلیمی ادارے بند رہیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *