علی رضا عابدی قتل کیس میں مارشل سیکیورٹی کمپنی کو شوکاز نوٹس جاری

News Desk

محکمہ داخلہ سندھ نے سابق ایم این اے علی رضا عابدی قتل کیس میں سکیورٹی فراہم کرنے والی مارشل کمپنی کو شوکاز نوٹس جاری کردیا ہے اور واضح کیا ہے کہ اگر 7 روز کے اندر جواب نہ دیا گیا تو کمپنی کا لائسنس منسوخ کردیا جائے گا۔محکمہ داخلہ سندھ کی جانب سے جاری کیے گئے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ سابق رہنما ایم کیو ایم پر حملے کے وقت سیکیورٹی کمپنی کا گارڈ گھرپرتعینات تھا تاہم سیکیورٹی گارڈ کا کام علی رضا عابدی کی جان بچانا تھا لیکن حملے کے وقت وہ ہتھارنہیں چلا پایا۔پولیس حکام کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے مختلف رہنماؤں کو 49 پولیس گارڈز فراہم کر دیے گئے ہیں۔ متحدہ رہنما ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی، فیصل سبزواری اور خواجہ اظہار کو پولیس موبائل فراہم کی جا چکی ہے جبکہ ایم کیو ایم پاکستان کے مزید رہنماؤں کو چند روز میں سیکورٹی دے دی جائے گی۔جاری کردہ نوٹس میں محکمہ داخلہ کی جانب سے ہدایت کی گئی ہے کہ سات روز کے اندر شوکاز نوٹس کا جواب دیا جائے۔ جواب نہ دینے پر کمپنی آرڈیننس 2000 کے تحت لائسنس منسوخ کر دیا جائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *