اپوزیشن اس وقت متحد ہو گی جب سب جیل میں ہوں گے۔‎

News Desk

حکومت کے خلاف اپوزیشن کے اتحاد کیلئے جمعیت علمائے اسلام ( ف )کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے اسلام آباد میں آصف علی زرداری سے ملاقات کی.ملاقات میں مولانا فضل الرحمن نے شکوہ کیا کہ ان کی اپوزیشن اتحاد کی تجویز پر ابھی تک کوئی پیش رفت نہیں ہوئی؟ مولانافضل الرحمن نے مسلم لیگ ن کی قیادت سے بھی ملاقات کی تجویز دی۔

مولانا فضل الرحمن نے واضح کیا کہ حزب اختلاف کے پاس گرینڈ اپوزیشن کے سوا کوئی راستہ نہیں. لیکن( ن ) لیگ خاموش ہے زرداری صاحب سے گلہ کیا ہے کہ آپ لوگوں نے سیاسی طور پر کس طرح کی حکمت عملی بنائی ہے؟

مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ ابھی تک شہباز شریف کی جانب سے کوئی جواب نہیں دیا گیا. اپوزیشن کے اتحاد کے لیے مسلم لیگ( ن )راضی ہوتی ہے تو پیپلز پارٹی نہیں ہوتی. کبھی پیپلز پارٹی راضی ہو جاتی ہے تو مسلم لیگ ن راضی نہیں ہوتی. ایک نہ ایک دن اپوزیشن کو حکومت کے خلاف متحد ہونا پڑے گا. اپوزیشن کا اتحاد وقت کا تقاضہ ہے۔انہوں نے کہا کہ کیااپوزیشن اس وقت متحد ہو گی جب سب جیل میں ہوں گے۔

مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ بین الاقوامی ایجنڈا بہت متحرک ہے۔ مدارس سے متعلق مطالبات پر کوئی پیش رفت نہیں ہوئی۔ اپوزیشن لیڈر کو پیغام بھیجا کہ اپوزیشن جماعتوں سے تجاویز لیں.تجاویز کی روشنی میں آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) بلائیں گے۔
انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں قائد حزب اختلاف کو چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی (پی اے سی) بنانے میں کامیاب رہیں۔نا امیدی کی باتیں نہیں۔صرف فیصلہ کرنے کی جرات چاہیے۔میرا سوال بھی یہی ہے کہ پیپلز پارٹی اور ن لیگ کیوں اکٹھی نہیں ہو پارہیں۔

واضح رہے کہ مولانا فضل الرحمن پیپلزپارٹی اور ن لیگ کی قیادت کو قریب لانے کے مشن پر ہیں اور اسی مقصد کیلئے انہوں نے آصف زرداری سے چوبیس گھنٹے میں دوسری ملاقات کی ہے۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان ہونے والی ملاقات میں اپوزیشن جماعتوں کے خلاف کارروائیوں پر اظہار تشویش کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *