عدالت نےآصف زرداری اور فریال تالپور کی ضمانت میں 23 جنوری تک توسیع کر دی

News Desk

بینکنگ کورٹ کراچی نے سندھ میگا منی لانڈرنگ کیس میں سابق صدر آصف زرداری اوران کی ہمشیرہ فریال تالپورکی ضمانت قبل از گرفتاری میں 23 جنوری تک توسیع کردی ہے۔منی لانڈرنگ کیس کی بینکنگ کورٹ میں سماعت ہوئی۔

وکیل ملزمان نے عدالت سے استدعا کی کہ ایف آئی اے کو حتمی چالان جمع کرانے کا حکم دیا جائے۔ جس پر عدالت نے کہا ہمیں تو سپریم کورٹ نے کارروائی سے روکا ہوا ہے، سپریم کورٹ کی اجازت کے بغیر ہم مزید کارروائی نہیں کرسکتے۔

انور مجیدعدالت میں پیش نہیں ہوئے ان  کی میڈیکل رپورٹ عدالت میں جمع کرائی گئی، اس موقع پر انور مجید کے بیٹے بھی عدالت میں موجود تھے۔ضمانت پر رہا سابق صدر آصف علی زرداری، فریال تالپور کی ضمانت کا آج آخری دن تھا۔

منی لانڈرنگ کا الزام ہے۔ کیس میں آصف علی زرداری، فریال تالپور نےعبوری ضمانت لے رکھی ہے۔ اسکے علاوہ انور مجید کے بیٹے نمر مجید، ذوالقرنین اور علی مجید، ملک ریاض کے داماد زین ملک بھی عبوری ضمانت پر ہیں۔

آصف زرداری  نے اپنے جواب میں استدعا کی سپریم کورٹ جے آئی ٹی کی رپورٹ مسترد کرے، جےآئی ٹی رپورٹ لیک ہونے سے عدالت کاتقدس پامال ہوا، زرداری خاندان جے آئی ٹی رپورٹ پر دفاع کا حق رکھتے ہیں، جے آئی ٹی معاملہ نیب کو بھجوانے کی تجویز دینے کا اختیار نہیں رکھتی۔

جواب میں کہا گیا فریال تالپور تمام اثاثوں کی تفصیلات ایف بی آر اور دیگر اداروں میں جمع کرا چکی ہیں۔جعلی اکاونٹس اور منی لانڈرنگ کیس میں انور مجید، عبدالغنی مجید، حسین لوائی اور طحہ رضا گرفتار ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *