ایف آئی اےکا خدمت خلق فاونڈیشن کی جائیدادیں ضبط کرنے کا حکم

News Desk

فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی نے ایم کیوایم کی فلاحی کاموں کے نام پر بنائی گئی این جی اوخدمت خلق فائونڈیشن کی 42جائیدادیں ضبط کرنے کا حکمنامہ جاری کردیا ہے، تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے نےکراچی میں ایم کیوایم کی فلاحی کاموں کے نام پر بنائی گئی این جی اوکےکےایف کی 42 جائیدادیں ضبط کرنےکےحکم نامےجاری کردیا ہے۔

‏بہادرآباد میں واقع متحدہ کے عارضی مرکز کا نام بھی حکم نامے میں شامل ہے۔ متحدہ نےعارضی مرکز کو بچانے کیلئے ایف آئی اے ہیڈکوارٹر سے رابطے کا فیصلہ کیا ہے۔ان جائیدادوں سے حاصل ہونے والی رقم مختلف کاموں کے لیے خرچ ہوتی تھی۔

سابق وفاقی وزیر بابر خان غوری،سابق رکن قومی اسمبلی سہیل منصور اور سینیٹر احمد علی سمیت چھ افراد کے ذریعے یہ رقوم برطانیہ بھی بھجوائی جاتی تھیں۔ جبکہ ان جائیدادوں کے کرائے سے ایم کیو ایم کے کچھ شہدائاور کچھ اسیروں کے خاندانوں کو امداد دی جاتی تھی۔

ایف آئی اے نے فی الحال اس فنڈ سے ایم کیو ایم کے شہدائاور اسیروں کے دی جانے والی امداد بند نہیں کی۔ ایف آئی اے کے مطابق ان کے پاس ناقابل تردید ثبوت موجود ہیں کہ یہ جائیدادیں بھتے کی رقوم سے خریدی گئی تھیں۔

ایم کیو ایم ترجمان کی جانب سے بیان میں کہا گیا کہ کسی فرد کی غلطی کو بنیاد بنا کر اربوں کی املاک ضبط کرنے کا فیصلہ تعصب کہلائے گا۔ ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی حکومت اور ایف آئی اے سے رابطہ جبکہ قانونی حل کے لیے وکلا سے مشاورت بھی کر رہی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *