وزیراعظم کو کوئی استحقاق نہیں کہ وہ نیب کی کارروائی کا سامنا نہ کریں

News Desk

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے وزیراعظم عمران خان کیخلاف تحقیقات پر تنقید کی ہے۔فواد چوہدری نے کہا ہے کہ عمران خان کے خلاف کیسوں سے نیب کی توقیر میں اضافہ نہیں ہوتا کسی مہذب ملک میں تصور کیا جا سکتا ہے کہ وزیراعظم پر ایسا مقدمہ چلے؟ 


وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ عمران خان پر مقدمہ توازن سے باہر ہے اس سے بُری مثال قائم ہو رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کے مقدمے کا آصف زرداری اور نواز شریف پر مقدمات سے مقابلہ نہیں عمران خان کے خلاف کیسز سے نیب کی توقیر میں اضافہ نہیں ہوتا نیب سے وزیراعظم پر مقدمہ چل نہیں پارہا نیب کو وزیر اعظم پر مقدمہ فوری ختم کرنا چاہیے دیگر مقدمات کا اثر یونیورسل نہیں۔
خیال رہے کہ چند روز قبل بھی فواد چوہدری نے کہا تھا کہ عمران خان کے خلاف نیب کا سرکاری ہیلی کاپٹر کیس وزیراعظم کی توہین ہے یہ کیس ختم کردینا چاہیے۔

چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے فواد چوہدری کے بیان پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جب قائد حزب اختلاف نیب کی کارروائی کا سامنا کرسکتا ہےتو وزیراعظم کو کوئی استحقاق نہیں کہ وہ نیب کی کارروائی کا سامنا نہ کریں۔

چیئرمین نیب نے کہا کہ بہت سادہ لوگ ہیں جنہوں نے وزیراعظم کی توہین کا کہا یہ وزیراعظم کی توہین نہیں بلکہ ان کی عزت میں کئی گنا اضافہ ہوا ہے ان کی توقیر ہوئی ہے اور قد کاٹھ میں اضافہ ہواہے۔

لاہور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہاکہ وزیراعظم کا احتساب بدعنوانی کے خاتمے کی جانب عملی قدم ہے۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ پاکستان میں قانون کی حکمرانی ہے۔ وزیراعظم نے خود وعدہ کیا تھا کہ وہ پاکستان سے بدعنوانی ختم کریں گے۔

جسٹس (ر) جاوید اقبال نے کہا کہ نیب پر حکومتی عہدیداروں کے ساتھ رعایت کرنے کے لیے کوئی دباؤ نہیں ہے۔ اگر مستقل میں دباؤ کا سامنا کرنا بھی پڑا تو نیب کبھی اس کے سامنے سرنگوں نہیں ہوگا اپنا کام آئین اور قانون کے مطابق کام کریں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *