فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کا معاملہ اپوزیشن سے مذاکرات کیلئے کمیٹی قائم ‎

News Desk

وزیراعظم عمران خان نے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے معاملے پر اپوزیشن سے مذاکرات کے لیے دو رکمی کمیٹی تشکیل دیے کر وزیر دفاع پرویز خٹک اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو اپوزیشن سے رابطوں کی ذمہ داری سونپ دی ہے۔

دو رکنی کمیٹی فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے معاملے پر اپوزیشن سے رابطہ کرے گی۔کمیٹی ن لیگ اور پیپلز پارٹی سے رابطوں میں وزارت قانون اور داخلہ کے تیار کردہ مسودے بھی پیش کرے گی۔

یاد رہے کہ سانحہ آرمی پبلک سکول کے بعد وفاقی حکومت نے فوجی عدالتیں قائم کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ابتدا میں فوجی عدالتیں 2 سال تک قائم کی گئی تھیں لیکن بعد میں ایکٹ آف پارلیمنٹ کے تحت ان کے قیام میں توسیع کر دی گئی تھی۔

16 دسمبر کو آئی ایس پی آر نے فوجی عدالتوں سے متعلق اہم تفصیلات جاری کر دی تھیں۔آئی ایس پی آر کے مطابق وفاقی حکومت نے 717 کیسسز فوجی عدالتوں میں بھیجے جن میں سے 546 نمٹائے جا چکے ہیں۔

سزا موت پانے والوں میں سے 56 افراد کو تختہ دار پر لٹکایا جا چکا ہے جبکہ 254 دہشتگردوں کی سزائے موت قانونی عمل کےباعث زیرالتوا ہے۔

234 مخلتف مجرموں کو مختلف دورانیے کی سزا سنائی جن میں کم سے کم مدت 5 سال ہے۔فوجی عدالتوں نے 2 ملزمان کو بری بھی کیا ہے۔

واضح رہے کہ فوجی عدالتوں کی مدت جنوری میں ختم ہونے جارہی ہے ۔جس پر حکومت نے فوجی عدالتوں کی مدت میں دوسری بار توسیع کا فیصلہ کر لیا ہے۔ فوجی عدالتوں کی مدت میں مزید 2 سال کی توسیع کی جائےگی۔ وزارت قانون نے فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کیلئے آئینی ترمیم کامسودہ تیارکر لیا ہے جسے آئندہ ہفتے ایوان میں پیش کیا جائے گا ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *