ریاست مدینہ کی دعویدار حکومت نے عوام کا مکہ اور مدینہ جانا بھی مشکل بنا دیا‎

نیوز ڈیسک

وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان نے حج اخراجات پر سبسڈی نہ دینے سے متعلق اپوزیشن کے توجہ دلاؤ نوٹس پر جواب دیتے ہوئے کہا ہےکہ حج کے 70 فیصد اخراجات سعودی عرب میں آتے ہیں جن پر ہمارا کنٹرول نہیں۔

وزیر مملکت کا کہنا تھا کہ سال 18-2017 میں حج اخراجات میں کچھ نہ کچھ اضافہ کردینا چاہیے تھا لیکن الیکشن کے باعث گزشتہ حکومت نے حج اخراجات میں اضافہ نہیں کیا۔ ہم ابھی بھی کوشش کررہے ہیں کہ کچھ نا کچھ ریلیف مل جائے۔

علی محمد خان نے مزید کہا کہ مدینہ کی ریاست میں لوگوں سے سچ بولا جاتا ہے اور ہم مدینہ کی ریاست قائم کرکے دکھائیں گے۔
شہباز شریف نے اپنے بیان میں حج پیکج کی قیمتوں میں اضافے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے پاکستانی حجاج کو دینی فریضہ کی ادائیگی میں مشکلات سے دوچار کر دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ریاست مدینہ کی دعویدار حکومت نے عوام کا مکہ اور مدینہ جانا بھی مشکل بنا دیا ہے۔شہباز شریف نے تحریک انصاف کی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ محسوس ہوتا ہے کہ حکومت نے حج کو مقدس مذہبی عبادت نہیں آمدن کا ذریعہ سمجھ لیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے ملکی تاریخ کا سب سے مہنگا حج قوم کو دیا ہے۔پی ٹی آئی پہلی حکومت ہے جس نے حج پر کسی قسم کی کوئی سبسڈی نہیں دی ہے۔
صدر مسلم لیگ ن نے کہا کہ ہماری حکومت نے 2018ء تک قربانی سمیت حج پیکجز کو مہنگا ہونے سے روکا حکومت کو سمجھنا ہو گا کہ حج کاروبار کا ذریعہ نہیں بلکہ ایک عبادت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حج میں حکومت نے اللہ کے مہمانوں کو سہولت دینا ہوتی ہے۔بھارت میں بھی حجاج کرام کو سہولت دی جاتی ہے لیکن ریاست مدینہ کے دعویداروں نے حاجیوں سے ہر ریلیف چھین لیا ہے۔

م کرکے دکھائیں گے۔
شہباز شریف نے اپنے بیان میں حج پیکج کی قیمتوں میں اضافے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے پاکستانی حجاج کو دینی فریضہ کی ادائیگی میں مشکلات سے دوچار کر دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ریاست مدینہ کی دعویدار حکومت نے عوام کا مکہ اور مدینہ جانا بھی مشکل بنا دیا ہے۔شہباز شریف نے تحریک انصاف کی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ محسوس ہوتا ہے کہ حکومت نے حج کو مقدس مذہبی عبادت نہیں آمدن کا ذریعہ سمجھ لیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے ملکی تاریخ کا سب سے مہنگا حج قوم کو دیا ہے۔پی ٹی آئی پہلی حکومت ہے جس نے حج پر کسی قسم کی کوئی سبسڈی نہیں دی ہے۔

صدر مسلم لیگ ن نے کہا کہ ہماری حکومت نے 2018ء تک قربانی سمیت حج پیکجز کو مہنگا ہونے سے روکا حکومت کو سمجھنا ہو گا کہ حج کاروبار کا ذریعہ نہیں بلکہ ایک عبادت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حج میں حکومت نے اللہ کے مہمانوں کو سہولت دینا ہوتی ہے۔بھارت میں بھی حجاج کرام کو سہولت دی جاتی ہے لیکن ریاست مدینہ کے دعویداروں نے حاجیوں سے ہر ریلیف چھین لیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *