آصف علی زرداری کا حکومت گرانے کیلئے میڈیا کو کندھے سے کندھا ملانے کا مشورہ ‎

نیوز ڈیسک

آصف علی زرداری نے حکومت گرانے کیلئے میڈیا کو کندھے سے کندھا ملانے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ  آپ کی مشکلیں آسان ہو جائیں گی۔ اور ہم صحافیوں کے معاملات ٹھیک کرنے کے لیے اُن کا ساتھ دیں گے۔انہوں نے کہا کشمیر اور پاکستان الگ نہیں مودی سمجھ لے مسئلہ کشمیر پر پوری قوم کا موقف ایک ہے۔

جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) ف کے تحت منعقدہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے سابق صدر نےکہا کہ اختلافات کے باوجود کشمیر کے مسئلہ پر ہم سب ایک ہی ہیں اور ہمارا دل کشمیریوں کے ساتھ دھڑکتا ہے۔
سابق صدر آصف علی زرداری کا کہنا تھا کشمیر پر پاکستان کے ہر بچے اور سیاسی جماعت کا ایک ہی موقف ہے۔

ذوالفقار علی بھٹو اور  محترمہ شہید نے ہر فورم پر کشمیر کی آواز بلند کی۔ تمام مشکلات ڈکٹیٹروں کے دور میں ہوئی۔ انہوں نے کہا کشمیر مسئلے پر بلاتفریق تمام جماعتوں کو اکٹھا ہونا چاہیے۔ پیپلزپارٹی کی بنیاد ہی کشمیر ہے ہم کشمیر اور کشمیر ہم سے جدا نہیں ہوسکتا کشمیر میں بہت ظلم ہو رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو نے بھی اندرا گاندھی سے کشمیر ایشو پر بات کی تھی اور راجیو گاندھی سے جب کشمیر پر بات کی گئی تو اس وقت اس نے کہا تھا کہ آج تک مجھ سے کسی نے اس مسئلہ پر بات ہی نہیں کی ہے۔ نریندر مودی کو بھی سمجھنا ہو گا کہ حکومت پاکستان کے ساتھ عوام کی رائے موجود ہے۔

سابق صدر نے مسئلہ کشمیر پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں سیاست سے بالا تر ہو کر مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے کردار ادا کرنا ہو گا۔ ہمارے ڈی این اے میں کشمیر شامل ہے اور ہم کشمیر سے ہیں اور کشمیر ہم سے ہے۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر پر تمام سیاسی قوتوں کا یکساں موقف ہے اور حکومت پاکستان کا موقف صرف حکومت کا نہیں بلکہ عوام کا ہے۔

آصف علی زرداری نے کہا کہ میری اگلی نسل بلاول بھٹو زرداری اور بختاور بھی کشمیر کی بات کرتے ہیں اور اللہ نے چاہا تو میں کشمیر کو اپنی زندگی میں آزاد دیکھوں گا۔

انہوں ںے کہا کہ کشمیریوں کے ساتھ ظلم و زیادتی کی جا رہی ہے اور آج کشمیر کے ہر گھر میں شہید موجود ہے جب کہ سینکڑوں کشمیری بھارتی ظلم کے باعث اپنی آنکھوں سے محروم ہو گئے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *