سعودی ولی عہد کا دورہ پاکستان، استقبال کی تیاریاں ،20 ارب ڈالر کے معاہدوں کا امکان

نیوز ڈیسک

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان 16 فروری کو پاکستان آئیں گے، ان کی آمد سے قبل ہی محمد بن سلمان کے وفد کے ارکان پاکستان پہنچنے لگے ہیں، ان میں ایڈوانس سکیورٹی ٹیم، ڈاکٹرز اور کوریج کرنے والے سعودی میڈیا کی ٹیمبں شامل ہیں، ایڈوانس سکیورٹی ٹیم نے مختلف مقامات کا جائزہ بھی لیا۔

وزیرِ اعظم ہاؤس میں سعودی سیکورٹی حکام نے ضروری اقدامات شروع کر دیے، ولی عہد کے قیام کا مکمل انتظام وزیرِ اعظم ہاؤس میں کیا جا رہا ہے۔سعودی آرمی، اسلامی فوجی اتحاد کے 235 اراکین پر مشتمل دستہ پاکستان پہنچ گیا ہے، سعودی ولی عہد کے ساتھ 130 شاہی گارڈز بھی ساتھ ہوں گے۔ولی عہد کو وزیرِ اعظم ہاؤس آمد پر گارڈ آف آنر پیش کیا جائے گااورشاہی مہمان کو پاک فضائیہ کا شیر دل اسکواڈرن سلامی دے گا۔

وزیرِ اعظم عمران خان اور ولی عہد کے درمیان وَن آن وَن ملاقات ہوگی، ملاقات کیمپ آفس وزیرِ اعظم ہاؤس میں ہوگی۔ سلامی کے لیے جے ایف 17 تھنڈر طیارے فلائی پاسٹ پیش کریں گے۔شاہی دورے کے لیے 300 پراڈو گاڑیوں کا انتظام بھی مکمل ہو گیا ہے، ولی عہد کے استعمال کے لیے گاڑیاں سعودی عرب سے لائی جائیں گی۔سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان کے دوران 20ارب ڈالر کے معاہدوں کی یاداشت پر دستخط کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے ۔منصوبوں میں آئل ریفائنری، کے پی، پنجاب سیاحت کے ہوٹلز کی تعمیر، توانائی پراجیکٹس شامل ہیں، حویلی بہادر شاہ ، بھکی پاور پلانٹ میں سعودی سرمایہ کا ری کا امکان ہے۔

ذرائع کے مطابق سعودی عرب کے ساتھ ادھار تیل کے معاملات طے پا چکے ہیں، ولی عہد کے دورہ کے دوران معاہدے پر دستخط ہوں گے، سعودی عرب 3 ارب ڈالر کا تیل 3 سال تک فراہم کرے گا، ایل این جی کے 2 بجلی گھر سعودی عرب کو دینے پر بھی بات چیت ہوگی، جن میں 2 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری متوقع ہے، سعودی عرب گوادر آئل ریفائنری میں 6 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کا خواہاں ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *