افغان طالبان اور امریکہ کے درمیان مذاکرات 18 فروری کو اسلام آباد میں ہوں گے

نیوز ڈیسک

 طالبان کےترجمان ذبیح اللہ مجاہد کے مطابق افغان طالبان اور امریکی حکام کےدرمیان اٹھارہ فروری کو اسلام آباد میں مذاکرات ہوں گے ۔

ملاقات کے دوران افغان مہاجرین اور باہمی تجارت سے متعلق بات چیت ہوگی۔افغان طالبان اور امریکا کے درمیان مذاکرات کا پہلا دور پاکستان کی معاونت سے متحدہ عرب امارات میں ہوا تھا جبکہ فریقین کے درمیان مذاکرات کا دوسرا دور قطر کے دارالحکومت دوحہ میں ہوا تھا۔

ترجمان کے مطابق طالبان کی مذاکراتی ٹیم میں مولوی ضیاء الرحمان، مولوی عبد السلام حنفی، شیخ شہاب الدین و دیگر شامل ہوں گے جب کہ شیر محمد عباس کو مذاکراتی ٹیم کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے۔

ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کے مطابق طالبان وفد وزیراعظم عمران خان سے بھی ملاقات کرے گا جبکہ پچیس فروری کو دوحا میں مذاکرات کا اگلا دور ہو گا۔

ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ امریکہ کے ساتھ مذاکرات درست سمت میں جا رہے ہیں اورامریکی مذاکراتی ٹیم کے سربراہ زلمے خلیل زاد کی طالبان کے نمائندوں سے ملاقاتوں میں گزشتہ تین ماہ سے تیزی آئی ہے۔

واضح رہے کہ امریکا نے افغانستان سے اپنی فوج کے انخلاء کا اعلان کیا ہے جبکہ طالبان کی جانب سے ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ افغان طالبان افغانستان سے داعش کا چند دنوں میں خاتمہ کرسکتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *