بھارتی جارحیت: بلااشتعال فائرنگ سے پاک فوج کے 2 جوانوں سمیت 4 افراد شہید‎

نیوزڈیسک

بھارتی فوج کی ایل او سی پر بلااشتعال فائرنگ سے پاک فوج کے 2 جوانوں سمیت 4 افراد شہید ہوگئے۔
پاکستان کی جانب سے امن کے پیغام اور بھارتی پائلٹ کی واپسی کے اقدام پر بھی جارحیت پسند بھارت کی امن دشمن کارروائیاں جاری ہیں جس نے لائن آف کنٹرول پر ایک بار پھر جارحیت کا مظاہرہ کیا ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول پر بلا اشتعال فائرنگ کی جس میں تتہ پانی اور جندروٹ سیکٹرز میں شہری آبادی کو نشانہ بنایا گیا۔
آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی اشتعال انگیزی کے نتیجے میں فائرنگ سے 2 شہری شہید اور خاتون سمیت 2 افراد زخمی ہوئے جنہیں فوری طبی امداد کے لیے کوٹلی کے اسپتال میں منتقل کردیا گیا۔

آئی ایس پی آر نے بتایا کہ بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول پر نکیال سیکٹر پر بھی بلا اشتعال فائرنگ کی اور اس دوران دو طرفہ فائرنگ کے تبادلے میں پاک فوج کے 2 جوان شہید ہوگئے.
آئی ایس پی آر کے مطابق شہید ہونے والے دونوں جوان شہری آبادی پر فائرنگ کے جواب میں بھارتی چوکیوں کو نشانہ بنا رہے تھے۔

بھارتی اشتعال انگیزی پر پاکستانی فوج نے بھرپور جوابی کارروائی کی ہے جس سے بھارتی چوکیوں اور فوجی دستوں کونقصان پہنچا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق موجودہ صورتحال کے پیشِ نظر پاکستان ایئر فورس اور پاکستان نیوی الرٹ ہیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی گولہ باری سے نکیال سیکٹر میں جام شہادت نوش کرنے والوں میں حوالدار عبدالرب اور نائیک خرم شامل ہیں۔ 31 سالہ حوالدار عبدالرب شہید کا تعلق ڈی جی خان سے ہے شہید نے سوگواران میں بیوہ اور 2 بیٹیاں چھوڑی ہیں۔ نائیک خرم کا تعلق بھی ڈیرہ غازی خان سے ہی ہے. نائیک خرم شہید نے سوگواران میں بیوہ اور ایک بیٹی چھوڑی ہے۔

دوسری طرف بزدل بھارتی افواج نے شہری آبادی پر فائرنگ اور گولہ باری کو وتیرہ بنالیا۔ بھارتی فورسز نے تتہ پانی اور جندروٹ، سیکٹر میں بھی جان بوجھ کر شہری آبادی کو نشانہ بنایا۔ فائرنگ سے 2 افراد شہید اور 2 زخمی ہو گئے جنہیں کوٹلی ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

آئی ايس پی آر کے مطابق پاک فوج کی منہ توڑ جواب سے بھارتی فوجیوں کی ہلاکت کی اطلاعات بھی ہیں جبکہ متعدد بھارتی چوکیاں بھی تباہ ہو گئی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *