نوازشریف بیماری کے باوجود اپنے نظرئیے پر قائم ہیں، بلاول بھٹو

نیوز ڈیسک

پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری نے سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف سے کوٹ لکھپت جیل میں ملاقات کی ۔ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نوازشریف سے ملاقات کا کوئی سیاسی مقصد نہیں تھا، صرف ان کی طبیعت دریافت کی۔ نوازشریف کافی بیمار لگ رہے تھے اس کے باوجود وہ کوئی سمجھوتہ کرتے نظر نہیں آتے۔

نہیں لگتا کوئی ڈیل ہو رہی ہے، ایسی باتیں سازش ہیں، میاں صاحب اپنے اصولوں پر قائم ہیں۔

نوازشریف کہتے ہیں نظریاتی ہوں، وہ نظریاتی سیاست کریں گے۔امید ہے وہ جلد رہا ہوجائیں گے۔  پیپلزپارٹی چیرمین بلاول بھٹو نواز شریف کی گرتی ہوئی صحت کو دیکھ کر پریشان ہوئے ۔ اانہوں نے کہا کہ دل کے مریض کو دبائومیں رکھنا تشدد کے مترادف ہے۔

بلاول بھٹو نےنواز شریف کویقین دہانی کرائی کہ آئندہ ملاقات جیل سے باہر ہوگی، اس پرنواز شریف نے ہنس کرجواب دیا کہ یہ بھی کہہ دیں ملاقات بہت جلد ہو، حکومت سے ڈیل کرنے کی بات ہوئی تو نواز شریف نےصاف انکارکردیا۔

اس کی تصدیق بلاول نے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو میں بھی کیا اور کہا میاں صاحب سمجھوتہ کرنے پر راضی نظر نہیں آتے۔میاں صاحب بیماری کے باوجود اپنے نظریئے پر قائم ہیں ۔میثاق جمہوریت کے سوال پر بلاول بھٹو نے جواب دیا کہ میثاق جمہوریت پر عمل درآمد نہ کرنا مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کی ناکامی ہے، میں صرف نوازشریف کی عیادت کرنے آیا تھا، پارلیمنٹ سے باہر کسی بڑے سیاسی اتحاد پر بات کرنا قبل ازوقت ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ جب میثاق جمہوریت ہوا تو ن لیگ اور پی پی پی نے ماضی کی غلطیاں معاف کردی تھیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *