وزیراعظم کی وزیراعلیٰ پنجاب کو تنخواہوں میں اضافے کا فیصلہ واپس لینے کی ہدایت‎

نیوز ڈیسک

وزیراعظم عمران خان نے گورنر پنجاب کو اراکین پنجاب اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافے کی سمری پر دستخط سے روک دیا۔

وزیراعظم عمران خان کفایت شعاری مہم کے برعکس ارکان پنجاب اسمبلی کی تنخواہیں بڑھانے پر سخت نالاں ہیں۔ وزیراعظم نے گورنر پنجاب چودھری سرور کو اراکین پنجاب اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافہ کی سمری پر دستخط کرنے سے روک دیا ہے۔

وزیراعظم نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کو ہدایت کی ہے کہ بل دوبارہ ایوان میں لایا جائے۔ انہوں نے ہدایت کی ہے کہ وزیراعلیٰ کو دی گئی تاحیات مراعات کے فیصلے پر نظر ثانی کی جائے۔

وزیراعطم نے واضح کیا کہ وزیراعلیٰ کو پوری زندگی کے لئے گھر دینے کا فیصلہ مناسب نہیں ہے۔ مراعات کا دورانیہ مدت ختم ہونے کے بعد زیادہ سے زیادہ تین ماہ کا ہونا چاہیے۔

ارکان پنجاب اسمبلی کی تنخواہوں کے معاملے پر وزیراعلیٰ کی مراعات کو بل سے نکالنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ کی مراعات کو قانونی طریقے سے نئی ترمیم کے ذریعے نکالا جائے گا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ موجودہ حالات میں معاشی بحران سے نمٹنے کی کوششیں کر رہے ہیں.حکومت کسی صورت تنخواہوں اور مراعات میں اضافے کا بوجھ برداشت کرنے کی متحمل نہیں ہو سکتی۔

وزیراعظم عمران خان نے ٹوٹر پر جاری اپنے بیان میں پنجاب اسمبلی کے اس فیصلے پر مایوسی کا اظہار کیا اور کہا کہ پنجاب اسمبلی کی جانب سے اراکین اسمبلی، وزراء اور خصوصاً وزیراعلیٰ کی تنخواہوں و مراعات میں اضافے کا فیصلہ سخت مایوس کن ہے.

انہوں نے کہا کہ پاکستان خوشحال ہوجائے تو شاید یہ قابلِ فہم ہو مگر ایسے میں جب عوام کو بنیادی سہولیات کی فراہمی کے لیے بھی وسائل دستیاب نہیں. یہ فیصلہ بالکل بلاجواز ہے.

یاد رہے کہ گزشتہ روز پنجاب عوامی نمائندگان ترمیمی بل 2019ء تحریکِ انصاف کے رکن غضنفرعباس چھینہ نے پنجاب اسمبلی میں پیش کیا جس کی منظوری قائمہ کمیٹی برائے قانون نے دی اور یوں بل 24 گھنٹے کے اندر منظور بھی ہوگیا۔

بل کے تحت ارکانِ اسمبلی کی تنخواہ اور مراعات 83 ہزار ماہانہ سے بڑھ کر ایک لاکھ 92 ہزار روپے ہوگئی. بنیادی تنخواہ 18 ہزار سے بڑھا کر 80 ہزارروپے ماہانہ. ڈیلی الاؤنس 1 ہزار سے بڑھا کر 4 ہزار.ہاؤس رینٹ 29 ہزار سے بڑھا کر 50 ہزار. یوٹیلیٹی الاؤنس 6 ہزار سے بڑھا کر 20 ہزار روپے اور مہمان داری الاؤنس 10 ہزار سے بڑھا کر 20 ہزار روپے کردیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *