وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے تنخواہوں اور مراعات میں اضافہ واپس لے لیا‎

نیوز ڈیسک

وزیراعظم عمران خان سے وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے ملاقات کی جس میں وزیراعلی اور اراکین پنجاب اسمبلی کی مراعات اور تنخواہوں میں اضافے سے متعلق بل کی منظوری پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیراعظم عمران خان نے اس بات پر ناگواری کا اظہار کرتے ہوئے وزیراعلی پنجاب کو کفایت شعاری اپنانے اور گورننس بہتر بنانے کی ہدایت کی۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے عثمان بزدار کو ہدایت کی کہ ارکان کی تنخواہوں میں اضافہ حکومت کی کفایت شعاری مہم کو مدنظر رکھ کر کیا جائے۔

صوبے میں گورننس بہتر بنانے سے متعلق پارٹی منشور پر عملدرآمد کریں اور بطور وزیراعلی انتظامی معاملات اپنے ہاتھ میں رکھیں۔

عثمان بزدار نے ارکان اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافے کے معاملے پر وزیراعظم کو بریفنگ دی جبکہ ان کا کہنا تھا کہ پارٹی رہنماؤں کی مداخلت سے فیصلوں پر عملدرآمد میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

چںد روز قبل پنجاب اسمبلی میں وزیراعلی وزراء اور ارکان اسمبلی کی تنخواہوں اور مراعات میں اضافے کا بل منظور کیا گیا تھا جس پر وزیراعظم عمران خان نے نہ صرف نوٹس لیا تھا بلکہ ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے عثمان بزدار کو اسلام آباد طلب بھی کیا تھا۔

بل کے مطابق عہدہ چھوڑتے وقت اگر وزیراعلی کے نام ذاتی گھر نہ ہوا تو لاہور میں انہیں گھر فراہم کیا جائے گا۔

اس سے قبل وزیراعلی پنجاب کو عہدے کے دوران رہائش فراہم کی جاتی رہی ہے۔ذاتی گھرنہ ہونے پر پنجاب کے وزیراعلی کو عمر بھر کیلیے گھر دینے کا بل بھی پنجاب اسمبلی میں منظور کیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ پنجاب اسمبلی سے پنجاب عوامی نمائندگان ترمیمی بل 2019ء تحریکِ انصاف کے رکن غضنفرعباس چھینہ نے پیش کیا تھا.اس بل کی قائمہ کمیٹی برائے قانون نے منظوری دی تھی جس کے بعد یہ بل 24 گھنٹے کے اندراندر منظور بھی ہو گیا تھا تاہم بل کی منظوری کے وقت اپوزیشن ارکان نے واک آؤٹ کیا ہوا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *